رات تاریکی کی آغوش میں بڑھتی جا رہی تھی۔ آسمان پر کچھ اِکّا دُکّا ستارے جگ مگ تھے، یہ بھی اپنی چمک کھوتے چلے گۓ۔ اگر آپ کو لگتا ہے کہ چاند کی روشنی سے رحیم کے کافلے کو راستہ دیکھنے میں مدد مِل جاتی، تو آپ اشعاعی بادلوں کو نہیں جانتے۔ Advertisements